نہ جینا ہوگا، نہ مرنا ہوگا اور نہ دھرنا ہوگا

|
نومبر 2, 2016


Facebooktwittergoogle_pluslinkedin
اتنے دنوں سے اسلام آباد بند کرنے کا شور مچانے والے اور حکومت سے استعفیٰ یا احتساب کا مطالبہ کرنے والے عمران خان نے خود ہی اسلام آباد بند کرنے کے ارادے سے استعفیٰ دے دیا۔ عمران خان کی جانب سے اسلام آباد بند کرنے کے اعلان پر کارکنان پورے جوش و خروش کے ساتھ ان کی آواز پر لبیک کہہ کر نکل پڑے تھے۔ پی ٹی آئی کارکنان نے پولیس کے ڈنڈے برداشت کیئے، کتنوں نے حوالات کی ہوا کھائی اور کتنوں نے سڑکوں پر دوڑیں لگائیں۔ "جذبہ جنون" والے سلمان احمد بھی جیل ہوکر آگئے، شیخ رشید نے سڑکوں پر دوڑیں لگائیں، حکمران جماعت کو چیخ چیخ کر للکارا۔ حتیٰ کہ حمزہ علی عباسی 2 گھنٹے جنگل کے راستے پیدل چل کر بنی گالہ پہنچے لیکن یہ ساری کوششیں عمران خان نے اپنے ایک فیصلے سے پانی میں ملا دیں۔ حکومت نے بھی کوئی کسر نہیں چھوڑی ۔ اس سے پہلے حکومت نے باآسانی دھرنا کرنے دیا تھا لیکن اس بار عمران خان کے اعلان پر حکومت نے بھی کمر کس لی۔ عمران خان کے اسلام آباد بندکرنےسے پہلے ہی انہوں نے پورا اسلام آباد بند کر دیا۔ جگہ جگہ پولیس کو غنڈہ گردی کے لئے چھوڑ دیا گیا۔ پولیس نے بھی پی ٹی آئی کارکنان پر ہاتھ صاف کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیا۔ جب آخر میں آکر یہی کرنا تھا تو پھر لوگوں کو اتنی دوڑیں لگوانے کی ضرورت ہی کیا تھی؟ سپریم کورٹ کی آنکھیں بھی اس معاملے پر نظر ثانی کے لئے اب جا کر کھلیں۔ پانامہ لیکس کو عرصہ ہو گیا لیکن اس سے پہلے اب تک کسی طرح کی تحقیقات کا اعلان سامنے نہیں آیا۔ پہلے بھی عمران خان صاحب الیکشن میں دھاندلی کی تحقیقات کا مطالبہ کر کر کے تھک گئے تھے لیکن ان کے حق میں کوئی نتیجہ سامنے نہ آیا تھا۔عمران خان صاحب ،جب سپریم کورٹ ہی جانا تھا تو پہلے ہی چلے جاتے اتنے ڈرامے کرنے کی کیا ضرورت تھی۔ اب اس کے بعد کیا نتیجہ سامنے آتا ہے یہ تو بعد میں ہی پتا چلے گا، لیکن و ہ کہاوت تو آپ سب نے سنی ہوگی "جس کی لاٹھی اس کی بھینس"۔
  1. it could be a better one if your other writer had written it, who had penned on salman ahmed and hamza abbasi. Way better than it.

اپنی رائے کا اظہار کریں

. .

Social media & sharing icons powered by UltimatelySocial