No Image
Facebooktwittergoogle_pluslinkedin

بات تو سچ ہے، پریش راول کی

|
جون 7, 2017


Facebooktwittergoogle_pluslinkedin
چافتی پھوڑ ڈالا رے۔۔۔ بھارتیوں کا چھاتی پھوڑ ڈالا۔۔۔ پریش راول نے پاکستان کے لیے جس محبت کا اظہار کیا ہے اس سے یقیناً بھارتی دہشت گرد، غنڈوں اور عوام کے سینوں میں ہارٹ اٹیک کی کیفیت پیدا ہوئی ہوگی۔ پریش راول نے بھارتی روزنامہ"ہندوستان ٹائمز" سے بات کرتے ہوئے کہا کہ
ہاں! میں پاکستانی فلم میں کام کرنا پسند کروں گا۔ مجھے تمام پاکستانی سیریل پسند ہیں جیسے 'ہم سفر'، جس طرح وہ اداکاری کرتے ہیں ، ان کی کہانی، ان کی زبان سب زبردست ہوتا ہے۔ ہمارے (بھارتی) شوز بورنگ ہوتے ہیں۔
ویسے تو پریش راول کا مزید کہنا تھا کہ فنکار و کھلاڑی بم نہیں گراتے مگر ان کی یہ بات بھارتیوں پر "مدر آف آل بم" بن کر گری ہوگی۔ پہلے ہی بھارتی عوام اور غنڈوں نے پاکستان میں کام کرنے پر اور پاکستان کا حق ساتھ دینے پر اوم پوری کا جینا محال کیا ہوا تھا اور آخر کار بات ان کے قتل پر ختم ہوئی۔ پریش راول کی ان باتوں سے انکی عوام خلاف ہوجائے گی اور پھر ارناب گو سوامی جیسے چرب زبان گلی کی خالہ نما صحافی اپنے پروگرامز میں بلوا کر بولنے بھی نہیں دیں گے۔
بھارتی غنڈا گردی کا زور اب اداکاروں پر سے ختم ہو رہا ہے۔ ایک طرف انوپم کھیر جیسے فنکار ہیں جو شاید رات میں سوتے ہوئے بھی پاکستان کے خلاف خواب دیکھتے ہونگے جو ہمیشہ خواب ہی رہیں گے۔ حال ہی میں صباء قمر کی فلم " ہندی میدیئم" نے بھارت میں دھوم مچائی ہے۔ کئی بھارتی فنکاروں نے ان کے کام کو سراہا۔ اور اب پریش راول نے تو پاکستان میں کام کرنے کی خواہش ظاہر کی ہے۔ پاکستانی فلم سازوں کو انھیں جلد پاکستان آنے کی دعوت دینی چاہیئے۔ فن و فنکار کا تبادلہ دونوں ممالک میں ہوتا رہے گا۔
اپنی رائے کا اظہار کریں

. .

Social media & sharing icons powered by UltimatelySocial