No Image
Facebooktwittergoogle_pluslinkedin

بھائی واچ ڈوگ… ذرا واچیئے

|
جون 15, 2017


Facebooktwittergoogle_pluslinkedin
الیکٹرونک میڈیا کے "واچ ڈوگ" کہلائے جانے والے ادارے نے ، جس کی خصلتیں صرف دوسرے لفظ والی ہی رہ گئی ہیں، اس سال رمضان آنے سے پہلے تازہ تازہ کلمہ پڑھا اور ہر برائی پر پابندی لگانے کی ٹھانی۔ جہاں رمضان ٹرانسمیشن کے قوائد جاری کیے جن پر عمل کی کوئی ضرورت نہیں ، وہیں کیو موبائل کے نئے اشتہار پر بھی پابندی لگائی گئی جس میں فہد مصطفیٰ موجود ہیں۔ یہ اشتہار دیکھ کر پابندی کی واضح کوئی وجہ سمجھ نہیں آتی، شاید یہ وجہ ہو کہ فہد مصطفیٰ کی گرل فرینڈ نے ان کے دیر سے آنے اور موبائل میں بیٹری ختم ہونے سے کال کٹ جانے کی وجہ سے انھیں دھوکہ دے دیا۔۔۔ توبہ توبہ
ویسے اگر اشتہارات پر غیر اخلاقی مواد کی وجہ سے پابندی لگنے پر آئے تو سب سے پہلے اس اشتہار پر پابندی لگنی چاہیئے جو ماڈل اور اداکاراؤں کو لیکر ٹانگیں عریاں کر کے "وکٹری" کا نشان بناتا ہے۔ اس اشتہار کے بارے میں کیا خیال ہے جس میں کترینا کیف کے ہونٹوں پر تازہ اور رسیلے آموں کا رس گرتا ہے، جسے دیکھتے ہی جوس پینے کا جوش سوار ہوجاتا ہے۔
وہ پراڈکٹ تو سب کو یاد ہوگا جس میں متھیرا بہت اچھی اور نیک بہو بن کر سامنے آئیں تھی۔ اسی پراڈکٹ کا ایک اور اشتہار نشر کیا تھا جس کا پورا گانا بنا یا گیا تھا۔۔۔ سنو ذرا خوشی کی آہٹ۔۔ سنو ذرا سنو سنو ذرا۔۔۔ ایسے پراڈکٹ کے اشتہار دینا پاکستانی معاشرے کے اخلاقیات کے عین مطابق ہے۔
اب پراڈکٹ اگر نسوانی ضرورت کے لیے ہے تو اس کےاشتہار میں عریانیت کی پوری اجازت ہے۔۔۔ اس پرادارے کے اٹس اوکے والی فیلنگ ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ اشتہار میں اگر حاملہ خاتون کو دیکھایا جائے تو بھی کوئی مسئلہ نہیں۔ آستینوں کی ضرورت ڈرامے اور فلموں میں نہیں تو اشتہار میں کیسے ہوگی۔ اشتہار کا تو پہلا اصول ہے، جو دکھتا ہے وہی بکتا ہے۔ اور دیس کا بسکٹ ہو یا چائے گورا بنانے کی پراڈکٹ، ناچنا تو پاکستانی تہذیب ہے۔
رمضان میں مزید بات نہیں کی جاسکتی ورنہ، وجوہاتِ تنقید اور بھی ہیں۔ کیو موبائل کے ایسے پہلے بھی اشتہارات آئے ہیں جس پر پابندی لگنی چاہیئے تھی مگر نہیں لگی۔اگر پابندی لگانی ہے تو ہر چیز پر لگائی جائے ورنہ یہ جانب داریاں بہت سے سوالات پیدا کر دیتی ہیں۔ ڈراموں اور فلموں میں کم ہوتے کپڑے اور اشتہارات میں بڑھتی ہوئی عریانیت کو ایک ساتھ کنٹرول کریں تو ہی اچھا ہے۔ ورنہ عوام پہلے ہی عزت نہیں دیتی، نظر سے اور گرتے جائیں گے۔
اپنی رائے کا اظہار کریں

. .

Social media & sharing icons powered by UltimatelySocial