No Image
Facebooktwittergoogle_pluslinkedin

جھوٹ بولے، ساحر کاٹے

|
اپريل 5, 2017


Facebooktwittergoogle_pluslinkedin
فلم راستہ کوناکامی کے راستے سے کوئی بچا نہیں سکتا، کیونکہ عوام کو بھی اچھی اور بری فلم میں فرق پتا ہے۔ عوام جانتی ہے ساحر لودھی دو طرح کی اداکاری کر سکتے ہیں، بری اداکاری اور نقلی اداکاری، اور عوام کو دونوں سے ہی نفرت ہے۔
فلم راستہ کے فیس بک پیج پر فلم کی تعریف میں بہت سی پوسٹ شائع کی جارہی ہیں۔ ایک پوسٹ میں اعجاز اسلم کے نام سے لکھا ہےکہ میری بہن کو نیوپلکس میں ٹکٹ ہی نہیں ملا۔ اعجاز اسلم سچ بتائیں ، باجی نے راستہ کا ٹکٹ ہی مانگا تھا؟؟
حالانکہ فلم راستہ تو خالی نشستوں سےروز ہاؤس فل جارہی ہے ۔ فیس بک کے پیج "دھنک" نے سنیما میں "ہاؤس فُل" کا راز فاش کردیا۔
ایسے ہی راستہ کو بچانے کے لیے کچھ طلباء کی باتوں سے بھی پیج کو سجانےکی ناکام کوشش کی جارہی ہے۔ بڑے کہتے ہیں کہ بچوں کو اچھے برےکی تمیز نہیں ہوتی۔ طلباء تو خود راستہ بھٹک گئے ہونگے تبھی فلم دیکھنے پہنچ گئے۔
راستہ فلم کو فیملی فلم کہا جارہا ہے!! جس فلم میں متھیرا ہو، وہ فیملی فلم ہو سکتی ہے؟ جس طرح ساحر کی اداکاری شاہ رخ خان کی نقل کے بنا نہیں ہو سکتی، اسی طرح متھیرا جس فلم میں ہو وہ فیملی فلم نہیں ہو سکتی۔ فلم کے گانے "پیلے" کو دیکھ کر خود فیصلہ کریں کہ فلم فیملی ہے یا نہیں
آخر میں ان صاحب کو دیکھیئے، ساحر لودھی سے اچھا ڈائیلاگ بولا ہے!!
اپنی رائے کا اظہار کریں

. .

Social media & sharing icons powered by UltimatelySocial